ماجد صدیقی ۔ غزل نمبر 5
پتّوں کی جو ماں ہے مامتا ہے
بَیری بھی اُنہی کی وُہ ہوا ہے
لپٹا ہُوا بھید بھید میں ہے
وہ بھید جو سب پہ اَن کھلا ہے
ماجد صدیقی
Advertisements